Advantages and Disadvantages of Mobile Phones in Urdu – موبائل فون: فوائد و نقصانات

موبائل فون: فوائد و نقصانات

بیسوی صدی کے نصف آخر اور اکیسویں صدی نے سائنس اور ٹیکنالوجی کی ترقی کا جو عروج دیکھا ہے وہ شاید اس سے قبل کسی کے وہم و گمان میں بھی نہ ہو۔ اس ترقی نے انسان کو بے شمار تحائف دیے ہیں جن میں سے انتہائی اہم اور مفید تحفہ جو ہر خاص و عام کے لیے یکساں مفید اور قابل استعمال ہے وہ موبائل ہے۔ ویسے تو کہا جاتا ہے کہ “ضرورت ایجاد کی ماں ہے” لیکن موبائل نے جس تیزی سے شہرت حاصل کی اور اب ہر کسی کی بنیادی ضرورت بنتا جا رہا ہے اس کو دیکھ کر یہ لگتا ہے کہ اب “ایجاد ضرورت کی ماں” بن گئی ہے۔

اس میں کوئی شک نہیں کہ موبائل فون ایک کار آمد، مفید سہولت ہے جس کے بے شمار فوائد ہیں اور اگر اسے ہوش مندی سے مثبت طور پر استعمال کیا جائے تو یہ انسانیت کے لیے ایک نعمت ثابت ہو سکتا ہے۔ تاہم ان فوائد سہولیات کے ساتھ ساتھ اس کے کچھ نقصانات بھی ہیں۔ ان نقصانات کی بھی کئی وجوہات ہیں جن میں سے ایک وجہ غیر محتاط اور بے دریغ استعمال بھی ہو سکتی ہے۔ ذیل میں ہم نکات کی صورت میں موبائل کے فوائد و نقصانات کا جائزہ پیش کرنے کی کوشش کریں گے۔

موبائل کے فوائد

  • رابطہ: رابطہ انسانی ضرورت ہے، اور موبائل کے ذریعے ہم اپنے رشتہ داروں، عزیز و اقارب ار دوستوں سے کسی بھی وقت با آسانی رابطہ کر سکتے ہیں، قطع نظر اس کے کہ ہم کہاں ہیں، کسی گاؤں میں ، شہر میں یا ملک سے باہر۔ اور اب تو ایسے موبائل بھی ایجاد ہو رہے ہیں کہ آپ نہ صرف بات کر سکتے ہیں بلکہ اپنے پیاروں کو دیکھ بھی سکتے ہیں۔
  • موبائل کا ایک فائدہ یہ ہے کہ اس میں توانائی محفوظ ہو سکتی ہے اور ہم بجلی کی غیر موجودگی میں بھی اپنے پیغامات ارسال کر سکتے ہیں اور کال کر سکتے ہیں۔
  • موبائل چونکہ حجم اور وزن کے اعتبار سے بہت کم اور چھوٹا ہے اور اسے آسانی سے اپنے ساتھ کہیں بھی لے جایا جا سکتا ہے، جس سے یہ سہولت ملتی ہے کہ جہاں کہیں بھی ہوں موصول ہونے والی کال بروقت سنی جا سکتی ہے۔
  • کاروباری سہولت: کچھ کاروبار ایسے ہوتے ہیں جن کا انحصار رابطے پر ہوتا ہے، موبائل کی مدد سے اس نوعیت کے کاروبار باآسانی اور ہر جگہ بیٹھ کر کیے جا سکتے ہیں۔
  • موبائل فون میں اپنی ڈائری ترتیب دینے اور شیڈول طے کرنے کی سہولت بھی ہوتی ہے جس سے آپ اپنے اوقات کار کو منظم کر سکتے ہیں۔
  • موبائل فون میں ایک اور سہولت جو نہ صرف تجارت پیشہ افراد بلکہ طلبہ و اساتذہ اور ذرائع ابلاغ سے متعلقہ افراد کے لیے بھی یکساں مفید ہے وہ انٹر نیٹ کی سہولت ہے۔ اس سہولت کے ذریعے بہت سے کام گھر بیٹھے یا دوران سفر بھی کیے جا سکتے ہیں۔
  • موبائل فون تفریح کا بھی ایک بہترین ذریعہ ہے۔ مثلا کام کے بوجھ کو کم کرنے یا بوریت ختم کرنے کے لیے اس میں موجود گیم کھیل سکتے ہیں، یا اس میں اپنے پسند کے نغمے محفوظ کر سکتے ہیں اور جب دل چاہے ان سے لطف اندوز ہو سکتے ہیں۔
  • مشکل حالات میں اپنے عزیز و اقارب اور دوستوں سے بر وقت رابطہ کر کے مد حاصل کی جا سکتی ہے، جبکہ موبائل کی ایجاد سے قبل ایسے صورتحال میں کافی مشکلات پیش آتی تھیں۔
  • غمی اور خوشی کی اطلاع فوری طور پر پہنچائی اور وصول کی جا سکتی ہے اور بر وقت موقع پر شریک ہوا جا سکتا ہے جبکہ اس سے قبل جب سارا انحصار ڈاک پر تھا ایک ایک اطلاع کو پہنچنے میں مہینے بھر کا وقت لگ جایا کرتا تھا۔

ان بے شمار فوائد کے ساتھ ساتھ موبائل فون کے بہت سے نقصانات یا منفی اثرات بھی ہیں۔

موفائل فون کے نقصانات

  • موبائل فون کی کارکردگی کا دار و مدار شعاؤں پر ہے اور اس کے بہت زیادہ استعمال سے انسانی دماغ پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں خاص طور پر چھوٹی عمر کے بچوں کے لیے زیادہ خطرات ہوتے ہیں۔
  • موبائل فون کے بے جا اور بہت زیادہ استعمال آنکھوں اور کانوں کے لیے بھی منفی اثرات کا باعث بنتا ہے۔
  • موبائل کا بے وقت استعمال بھی باعث نقصان ہو سکتا ہے، مثلا کچھ طور گاڑی چلاتے وقت موبائل کا استعمال کرتے ہیں، جس کی وجہ سے ان کی توجہ تقسیم ہو جاتی ہے اور حادثے کا خطرہ رہتا ہے اور بسا اوقات حادثات ہو جاتے ہیں۔
  • موبائل کے بے مصرف اور بہت زیادہ استعمال سے لوگوں کا آپس کا میل جول اور بالمشافہ ملاقات کا تصور معدوم ہوتا جا رہا ہے۔ ہزاروں میل دور بیٹھے دوستوں سے تو پل پل کا رابطہ رہتا ہے لیکن ساتھ والے کمرے میں یا ساتھ والے گھر میں رہنے والے رشتہ داروں کی خبر تک نہیں ہوتی۔
  • موبائل فون جن میں کیمرا اور ویڈیو کی سہولت موجود ہے اور جن میں ویڈیوز محفوظ کرنے کی بے شمار جگہ ہوتی ہے اس کے نقصانات اور منفی اثرات عام موبائل کے مقابلے میں کئی گناہ زیادہ ہیں۔ بچے چھوٹی عمر سے ہی ایسی ایسی مخرب اخلاق اور منفی چیزیں دیکھنا شروع کر دیتے ہیں جو ان کے غیر پختہ ذہن کے لیے بہت زیادہ نقصان دہ ہوتی ہیں۔ اور اسی وجہ سے بچوں میں اخلاقی جرائم میں اضافہ ہو رہا ہے۔

موبائل ایک سہولت ہے اور اس   کا مثبت ، محتاط اور ضروری استعمال انسانیت کے لیے ایک بہت بڑی سہولت اور نعمت ہے۔ نقصانات جن کا کچھ تذکرہ اوپر کی سطور میں کیا گیا ہے اگر ان کا جائزہ لیا جائے تو اندازہ ہو گا کہ اس فہرست میں گنوائے گئے سارے نقصانات صرف اور صرف غیر ضروری، بے مقصد، غیر محتاط، بہت زیادہ اور منفی استعمال کی وجہ  سے ہیں۔ اگر  احتیاط کے تقاضوں کو پیش نظر رکھ کر استعمال کیا جائے تو ان نقصانات سے بچا جا سکتا ہے ۔  اس مطلوبہ احتیاط کے لیے جہاں حکومت کی طرف سے پالیسی سازی کی ضرورت ہے وہاں خاندان کے بڑوں کی جانب سے نگرانی کی بھی بہت زیادہ ضرورت ہے۔

Categories :
Tags :

Comments are closed.

Translate »